Woh Mosamo Se Likhta Raha Barish

woh mosamo se likhta raha barish

woh mosamo se likhta raha barish

 

راتوں کو چمکتے ھیں یہ ستارے اسمان پر
وہ موسموں سے لکھتا رھا بارش
حرف حرف بوند بوند سے بھگتے رھےوہ موسموں سے لکھتا رھا بارش
سارا جہاں گنگناتا رھا کیا زمین کیا اسمان
سراپا بہار
اس قدر شوخ صبح پلک پلک ستارہ سی شام کہ سچی ھے محبت تمھاری
وہ موسموں سے لکھتا رھا بارش
پھولوں پے شبنمی جگنوں سی چمکتی مہکتی
بوند بوند رس گھولتی رھی ٹہنی ٹہنی لچکتی
 
حیا سے بھیگتی فضاں میں شرمیلی گنگناتی چلی
شرم کی لالی میں وہ ڈوب گیا کہتے ھیں جسے
پیار سے
طلوع ھو محبت سے جا اس غنچہ کاینات میں ھول سا پیکر لباس نور میں پیدا کیا
چہک بخشی قدرت نے اواز میں تیری
نہ پوچھو لزت نرالا عشق ھے پھلا پھولا
راتوں کو چمکتے ھیں یہ ستارے اسمان پر
وہ موسموں سے لکھتا رھا بارش
حرف حرف بوند بوند سے بھگتے رھےوہ موسموں سے لکھتا رھا بارش
 
Poetry by: Rubiey Huda

Leave a Reply