Mosam Kesa Khusgawar HeAj Tery Sath Ka Sabab He

mosam kesa khusgawar he aj tery sath ka sabab he

mosam kesa khusgawar he aj tery sath ka sabab he

موسم کیسا خوشگوار ہے آج تیرے ساتھ کا سبب ہے
جینے کی امنگ پھرسے لوٹ آئی تیرے ساتھ کا سبب ہے
میرے اردگرد تھی پھیلی تپش دل بھی تھا بے چین
ساون کی گھٹا امنڈ آئ تیرے ساتھ کا سبب ہے

زندگی گذاررہے تھے ہم انجانی ڈگر پر
دل میں نہ کوئی خاہش تھی نہ سہانے سپنے پاس
سانسیں تھیں ٹھہریں دل بھی تھا بوجھل
دل میں ہیں اب چاہت کے سلسلے تیرے ساتھ کا سبب ہے

جینا مارنا ساتھ اب چھوڑکر کبھی مت جانا
دھوپ سے سایے میں لا کر اب چھوڑ کر کبی مت جانا
تیرے ساتھ پل گزارنے کی کچھ عادت سی پڑ گیی ہے
زندگی ہو گیی ہے سوہانی تیرے ساتھ کا سبب ہے

ساتھ اس طرح دینا کے کبھی بچھڑنا نہ پڑے
میرے دل پر نقش ہے توکبھی مٹانا نہ پڑے
تجھ سے بچھڑنے کا سوچ کر میں کانپ سا جاتا ہوں
کتنی بڑھ گی ہے تڑپ تیرے ساتھ کا سبب ہے

Poetry By : Syed Zulfiqar Haider

Leave a Reply